Jump to content

Urdu Poetry - بزم سخن

Sign in to follow this  

67 topics in this forum

    • 87 replies
    • 6,125 views
  1. Sad Poetry - اداس شاعری 1 2

    • 41 replies
    • 3,342 views
    • 14 replies
    • 202 views
    • 10 replies
    • 135 views
    • 6 replies
    • 272 views
    • 1 reply
    • 501 views
    • 7 replies
    • 562 views
    • 10 replies
    • 1,912 views
    • 2 replies
    • 421 views
    • 11 replies
    • 191 views
    • 11 replies
    • 1,689 views
    • 14 replies
    • 2,859 views
    • 2 replies
    • 92 views
    • 0 replies
    • 207 views
    • 0 replies
    • 136 views
    • 3 replies
    • 475 views
    • 2 replies
    • 638 views
    • 12 replies
    • 1,593 views
    • 1 reply
    • 389 views
    • 11 replies
    • 448 views
    • 10 replies
    • 397 views
    • 1 reply
    • 273 views
    • 0 replies
    • 342 views
    • 5 replies
    • 554 views
    • 5 replies
    • 615 views
Sign in to follow this  
  • Posts

    • دل منافق تھا شبِ ہجر میں سویا کیسا اور جب تجھ سے ملا ٹوٹ کے رویا کیسا
    • نیا اک رشتہ پیدا کیوں کریں ہم بچھڑنا ہے تو جھگڑا کیوں کریں ہم خموشی سے ادا ہو رسم دوری کوئی ہنگامہ برپا کیوں کریں ہم یہ کافی ہے کہ ہم دشمن نہیں ہیں وفا داری کا دعویٰ کیوں کریں ہم وفا اخلاص قربانی محبت اب ان لفظوں کا پیچھا کیوں کریں ہم ہماری ہی تمنا کیوں کرو تم تمہاری ہی تمنا کیوں کریں ہم کیا تھا عہد جب لمحوں میں ہم نے تو ساری عمر ایفا کیوں کریں ہم نہیں دنیا کو جب پروا ہماری تو پھر دنیا کی پروا کیوں کریں ہم یہ بستی ہے مسلمانوں کی بستی یہاں کار مسیحا کیوں کریں ہم
    • بے قراری سی بے قراری ہے وصل ہے اور فراق طاری ہے جو گزاری نہ جا سکی ہم سے ہم نے وہ زندگی گزاری ہے نگھرے کیا ہوئے کہ لوگوں پر اپنا سایہ بھی اب تو بھاری ہے بن تمہارے کبھی نہیں آئی کیا مری نیند بھی تمہاری ہے آپ میں کیسے آؤں میں تجھ بن سانس جو چل رہی ہے آری ہے اس سے کہیو کہ دل کی گلیوں میں رات دن تیری انتظاری ہے ہجر ہو یا وصال ہو کچھ ہو ہم ہیں اور اس کی یادگاری ہے اک مہک سمت دل سے آئی تھی میں یہ سمجھا تری سواری ہے حادثوں کا حساب ہے اپنا ورنہ ہر آن سب کی باری ہے خوش رہے تو کہ زندگی اپنی عمر بھر کی امیدواری ہے
    • اے محبت ترے انجام پہ رونا آیا جانے کیوں آج ترے نام پہ رونا آیا   یوں تو ہر شام امیدوں میں گزر جاتی ہے آج کچھ بات ہے جو شام پہ رونا آیا   کبھی تقدیر کا ماتم کبھی دنیا کا گلہ منزل عشق میں ہر گام پہ رونا آیا   مجھ پہ ہی ختم ہوا سلسلۂ نوحہ گری اس قدر گردش ایام پہ رونا آیا   جب ہوا ذکر زمانے میں محبت کا شکیلؔ مجھ کو اپنے دل ناکام پہ رونا آیا
    • I purchased KHULOOD perfume for my wife on my nikah anniversary. It has lovely fragrance and I personally like it. It aroma is wonderful which is feeling calm and relaxing.
×
×
  • Create New...